syedfaisal

December 13, 2009

YEH KIS JANG MEIN HAI PARAI HUM

یۃ کس جنگ میں ھیں پڑے ھم
شھید بھی اپنے ھلاک بھی اپنے

یۃ کس راہ پۃ ھیں چلے ھم
نشیب بھی اپنے فراز بھی اپنے

اس راہ پۃ روشنی کیوں نھیں ھے
جبکۃ اندھیرے بھی اپنے چراغ بھی اپنے

کیوں انسانیت کی نۃ قدر کریں ھم
کۃ ھم بھی اپنے اور تم بھی اپنے

یۃ اس جنگ کی ھے سوچ پرائ
پر ھاتھ اپنے اور دماغ اپنے

یۃ سب ھے ذاتی مفادات کا کھیل
تعصبات بھی اپے تضادات بھی اپنے

ھے راھبروں کی یۃ خود پرستی
وہ خود بھی اپنے پرستار بھی اپنے

یۃ لمحۃ موت کا آخر گذرے گا کب پھر
جبکۃ وقت بھی اپنا مکاں بھی اپنے

یۃ اس خدا کی زمیں ھے یارو
ھیں جس کے بندے تمام اپنے

ھے وقت اب بھی کۃ خود کو سنبھالیں
ورنۃ ٹوٹ جائنگے تمام سپنے

فیصل

Advertisements

2 Comments »

  1. […] This cup of tea was served by: syedfaisal […]

    Pingback by YEH KIS JANG MEIN HAI PARAI HUM | Tea Break — December 13, 2009 @ 8:57 am

  2. Very Appreciated TRUE WORDS ..i Must say These WORDS Are Coming from HEART

    Comment by FAHIM AHMED — May 24, 2011 @ 1:59 pm


RSS feed for comments on this post. TrackBack URI

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

Create a free website or blog at WordPress.com.

%d bloggers like this: